ریڈیو انٹینا خود بنائیں اور صاف نشریات سے لطف اندوز ہوں

تجربات ، مشاہدات و تحریر سردار منیر اختر ، ٹیکسلا پاکستان
ریڈیو سامعین دوستو اسلام علیکم
میرا نام سردار منیر اختر ہے میں ٹیکسلا میں مقیم ہوں اور ستوڑہ لسنرز کلب کا صدر اور انٹرنیشنل ریڈیو لسنرز آرگنائیزیشن پاکستان کا فعال ممبر ہوں ، آپ جانتے ہیں کہ زیادہ تر ریڈیو نشریات اب انٹرنیٹ پر بھی دستیاب ہیں اس کے باوجود دنیا بھر میں سامعین کی ایک بہت بڑی تعداد اب بھی فریکونسی پر نشریات سننے کو ترجیح دیتی ہے لیکن دنیا میں کئی جدید ٹیکنالوجی کے وارد ہونے کے بعد اور عالمی سطح پر ماحولیاتی تبدیلی کی وجہ سے فریکونسی نشریات میں ماضی کی بانسبت کافی شور اور خلل واقع ہوتا ہے ، میں سامعین دوستوں سے نشریات کو بہتر کرنے کے حوالے سے چند اپنے تجربات شئیر کرنا چاہتا ہوں جس سے آپ ریڈیو نشریات بہتر انداز میں سن سکتے ہیں ۔

اگر آپ ایکسڑنل انٹینا استعمال کرنا چاہتے ہیں اور اس کا   سائز چھوٹا ہے پھر تو آپ اس کی تار کو ڈائریکٹ ریڈیو انٹینا سے منسلک کردیں لیکن اگر آپ کے بنائے ہوئے 
 انٹینا کا سائز بڑا ہے  تو پھر انٹینا کی تار ننگی کر کے اسے ریڈیو کے انٹینا کے ساتھ بلکل نہ لگائیں  بلکہ اس تار کو ذرا سا ننگا کر کے ریڈیو جہاں پہ رکھا ہے وہاں  رکھ دیں یا ریڈیو کی پشت کے ساتھ سلوشن ٹیپ سے چپکا دیں کیونکہ ڈائریکٹ تار لگانے سے اتنی اور لوڈینگ یعنی مداخلت  ہوگی کہ آپ ملی جلی آوازوں میں سے اپنی من پسند نشریاتی نہیں سن سکیں گے کیونکہ اس طرح دیگر نشریات کی مداخلت مزید تیز ہوجائے  گی۔انٹینا کے لیے تانبے (کاپر)کی تار  جو کے ٹیلی فون کی مین لائین  میں جسے ڈراپ وائر  بھی کہتے ہیں استعمال ہوتی ہے  اس تار کا ایک فٹ کا ٹکڑا بھی بہتر نشریات سننے کے لیے آپکا بہت بڑا معاون ثابت ہوسکتا ہے  اس ایک فٹ کے ٹکرے کے ساتھ تار لگا کر تار کا دوسرا سرا ریڈیو کے انٹینا سے لگا دیں اور کاپر وائر یعنی تانبے کی تار کو آپ تھوڑا اونچا رکھیں  لیکن اس بات کا خیال رکھیں کہ اسے بجلی کی تاروں سے دور رکھیں ورنہ یہ بجلی کی مداخلت کی وجہ سے نشریات واضح کرنے کے بجاے شور کا سبب بن سکتا ہے ۔


اس کے علاو ٹیلیویژن کی نشریات دیکھنے کے لیئے استمال ہونے والی   ڈش کی چھتری کے ساتھ لگی تار جو ایل این بی سے  ڈش کے  ریسیور کی طرف آتی ہےاسے بھی ریڈیو کے ساتھ لگا کرآپ نشریات بہت واضح سن سکتے ہیں۔خیال رہے کہ ڈش انٹینا  کی چھتری سے آنے والی تار جو ڈش ریسور کے ساتھ منسلک ہوتی ہے  اسے ڈش ریسور سے نکال کے ریڈیو انٹینا سے لگانا ہوگا ۔ٹیلیویژن کے جدید کیبل سسٹم آنے کے بعد دیکھنے میں آیا ہے کہ کئی گھروں کی چھتوں پر ڈش انٹینا لگا تو ہے لیکن اب استمال میں نہیں تو اسے ریڈیو ایکسٹرنل انٹینا کے طور پر استمال کیا جاسکتا ہے بس آپ نے کرنا صرف یہ ہے کہ اسے ڈش انٹینا کے ریسیور سے نکال کر ریڈیو کے انٹرنل انٹینا نے ساتھ  یا ریڈیو میں دئیے گئے ایکسٹرنل انٹینا کے پوائینٹ میں لگانا ہے ۔

اس کے علاو ٹی وی کے ابتدائی ادوار میں  ٹی وی کے ساتھ ایک انٹینا آیا کرتا تھا جو سلور دھات سے بنا ہوتا تھا  بلکل ریڈیو انٹینا کی طرح لیکن ریڈیو انٹینا کی ایک شاخ ہوا کرتی تھی لیکن ٹی وی کے اس انٹینا کی دو شاخیں ہوتی ہیں یہ انٹینا بھی  ریڈیوکی نشریات کو صاف کرنے کے لیے بہت شاندار چیزہے۔

شارٹ ویو نشریات میں کاپروائر خاص کر کے 31میٹر بینڈ پر بہت اعلی طریقے سے کام  کرتی ہے  اس سے کوئی بھی اورلوڈینگ  یعنی کے مختلف ریڈیو سٹیشن کی ملی جلی مداخلتی  آوازیں نہیں آتی ہیں میں نے اپنے گاؤں میں تقریبا پانچ فٹ کی کاپر وائر کو تار کے ساتھ منسلک کر کے ریڈیو سے لگا رکھا تھا جس سے نشریات بہت واضح تھیں۔اردو نشریات کے لیے تار لگانے کی ضرورت نہیں تھی لیکن کچھ انگریزی نشریات جیسے ریڈیو نیدر لینڈ وغیرہ۔

 ایک اور تجربہ سلور کی وہ پرات ہے جسے تھالی  بھی کہا جاتا ہے  جسےعمعوما ہماری خواتین آٹا گوندھنے کے لیے استعمال کرتی ہیں اور ماضی میں جب ڈش انٹینا یا ٹی وی کیبل نہیں تھا تو لوگ سلور کی اسی پرات کو عمان اور دور درشن ٹی وی کی نشریات حاصل کرنےکے لیئے  ٹی وی انٹینا کے ساتھ منسلک کردیا کرتے تھے  ، اس پرات  میں بھی تار لگا کرریڈیو کے ساتھ لگانے سے تمام میٹر بینڈ پر نشریات میں بہت بڑا فرق سنائی دیتا ہے اور مداخلت اور شورو غل کی آواز بھی نہیں آتی۔

انٹرنیشنل ریڈیو لسنرز آرگنائیزیشن پاکستان کے زیر اہتمام آن لائن نمائش کا انعقاد


ہمیں یہ اطلاع دیتے ہوئے نہایت مسرت ہورہی ہے کہ  سال رواں کے ابتداء میں ہمارے کلب انٹرنیشنل ریڈیو لسنرز کلب پاکستان نے اس جدید دور میں ریڈیو کی کم ہوتی افادیت اور اہمیت کو مدنظر رکھتے ہوئے ریڈیو کی بقاء اور ترقی کی خاطر مشترکہ جدوجہد کی غرض سے دنیا بھر کے ریڈیو سامعین کو ایک پلیٹ فارم  پر یکجا کرنے کا جو خواب دیکھا تھا الحمداللہ رب ذولجلال کی مدد  و رضا  ،  وطن عزیز پاکستان سمیت دنیا بھر سے ریڈیو سامعین  اور نشریاتی اداروں کے بے پناہ تعاون سے آج شرمندہ تعبیر  ہو رہا ہے، اس کامیابی پر ہم  بارگاہ  رب کریم میں سجدہ ریز ہیں ۔
جیسا کہ آپ کے علم میں ہے کہ پہلے ہم کلب کے ساتھیوں کے ساتھ اس کارواں کو لے کر آگے بڑھے اور اب دنیا بھر کے ریڈیو سامعین اور سامعین کلب  ہمارے کارواں میں شریک ہوچکے ہیں اس وجہ سے کلب کے ممبران اور کلب میں شمولیت اختیار کرنے والے دنیا بھر کے سامعین کلبوں کے مشورے  سے ریڈیو سامعین کے مشترکہ اس پلیٹ فارم  کے نام میں کلب کی جگہہ آرگنائیزیشن کی تبدیلی کو فیصلہ کیا گیا  آج سے  35 سال  پہلے ہم نے جس کلب کی بنیاد رکھی تھی  الحمداللہ   وہ آج آرگنائیزیشن کی شکل اختیار کرگیا ۔یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے  کہ سال رواں کے آغاز میں ہم نے ریڈیو سامعین کی جانب سے ایک مشترکہ سلوگن دیا  تھا  کہ " ریڈیو ماضی نہیں  مستقبل ہے " جو اب ریڈیو کی دنیا کا  مقبول سلوگن بن چکا ہے جس کے لیے ہم تمام ریڈیو سامعین کے ساتھ ساتھ نشریاتی اداروں کے بھی شکرگذار ہیں جنہوں نے اسے متعارف کرانے میں اہم کردار ادا کیا اور ہماری کاوشوں کو سراہا۔
اسی سلوگن کو عملی جامہ پہنانے کے لیئے  ہماری تنظیم نے دنیا بھر کے ریڈیو سامعین کی ایک آن لائن نمائش  بعنوان " ریڈیو لسنرز کلب نشریات کی دنیا کے ماتھے کا جھومر" کرانے کا فیصلہ کیا جس کا آغاز یکم جولائی سے کردیا گیا اس نمائش میں دنیا بھر سے ریڈیو سامعین ، نشریاتی ادارے اور ریڈیو کے ہر شعبہ سے وابسطہ افراد شرکت کریں گے  یہ نمائش ماہ اگست کے درمیان تک جاری رہے گی جس میں شرکت کرنے والے ریڈیو سامعین کلب   کے لیئے تین دن مختص کیئے گئے ہیں جس میں ہر کلب پہلے دن اپنے کلب کا تعارف پیش کرے گا کہ اس کی بنیاد کب رکھی گئی، کس علاقے میں کلب قائم ے وغیرہ وغیرہ ،  یہ ہر کلب پر منحصر ہے کہ وہ  جتنا تفصیلی یا محدود تعارف پیش کریں ،  دوسرے دن  کلب اپنے کلب  کو ملنی والی نشریاتی اداروں یا ریڈیو کے حوالے سے کسی بھی  جانب سے اشیاء، اعزازات کی تصاویر، کلب کے زیر اہتمام ہونے والی سرگرمیوں کی تصاویر وغیرہ وغیرہ  نمائش کے پیج پر اپ لوڈ کرے گا،  تیسرے دن کلب کا نمائیندہ نئے آنے والے سامعین کی جانب سے پوچھے گئے سوالات کے جواب اور ان کی رہنمائی کے لیئے مشورے دے سکتا ہے اور کمنٹس میں کئے گئے سوالات کے جوابات  (اگر ضروری ہوں تو) دے سکتا ہے ۔
اس طرح ایک کلب کو تین دن مکمل کرنے ہیں ،ہر کلب کو دئیے گئے تین دن کے دوران پانج ججوں پر مشتمل جیوری ان تمام چیزوں کا بغور مطالعہ کرتی رہے گی اور تمام کلب کے ایام مکمل ہونے  اور نمائش کے عمل مکمل ہونے پر جیوری  کی جانب سے اعلان کیا جائے گا کہ کون سا کلب سب سے بہتر  کاکردگی کا مظاہرہ کرسکا    اعلان کے بعد اس کلب کو بیسٹ کلب کا ایواڈ سرٹیفکیٹ  دیا جائے گا ۔
ہم تمام نشریاتی اداروں، اخبار و جرائد  کے مدیران ، آن لائن نیوز ویب سائیٹ مدیران اور دنیا بھر کے سامعین اور ریڈیو سے وابسطہ شخصیات سے گذارش کرتے ہیں کہ وہ   ریڈیو سامعین کی پہلی آن لائن نمائش میں ضرور شرکت کریں اور اپنے تاثرات رقم کریں  ، آن  لائن نمائش کا لنک یہ ہے 

ضروری اطلاع

تما م سامعین دوست جو آن لائن میگزین "ریڈیو کی آواز"
 میں اپنا، اپنے کلب کا تعارف، کلب کے تحت ہونے والی
 سرگرمیوں کی رپورٹ، ریڈیو لسننگ سے متعلق کوئی بھی
 تحریر کسی بھی نشریاتی ادارے سے متعلق اپنے تبصرے
  روانہ کرنے کے خواہشمند ہیں وہ اپنی تحریریں
 ( ایم ایس ورڈ   اردو   یا ان پیج فارمیٹ ) پر بمعہ ایک
 تصویر نیچے دیئے گئے  ای میل   پر روانہ کردیں

ریڈیو سامعین کی محفل

ریڈیو سامعین کی محفل  
دنیا بھر سے ریڈیو سامعین پر مشتمل گروپ" ریڈیو سامعین کی محفل"  اب میسنجر کے بعد واٹس ایپ پر بھی تشکیل دے دیا گیا ہے،گروپ میں شمولیت کے لیئے سامعین اپنا واٹس ایپ نمبر  "ریڈیو سامعین کی محفل" لکھ کرای میل کرسکتے ہیں۔
irlclub@hotmail.com  

انٹرنیشنل ریڈیو لسنرز کلب کا ملک بھر میں ممبر شپ کا آغاز


انٹرنیشنل ریڈیو لسنرز کلب نے ملک بھر سے ریڈیو سامعین کی ممبرشپ کا آغاز کیا ہے ، ریڈیو سننے والے تمام سامعین کو کلب کی ممبر شپ  پیش کی جارہی ہے جس کے اغراض و مقاصد مندرجہ ذیل ہیں ۔
اغراض و مقاصد
1.تمام ریڈیو سامعین اور ریڈیو سے وابسطہ شخصیات کو ایک صفحہ پر لانا۔
2.پاکستان میں تمام ریڈیو سننے والے سامعین کو ایک دوسرے سے رابطہ میں رکھنا۔
3.پاکستان میں قائم تمام چھوٹے بڑے ریڈیو سامعین کلبوں کو ایک انٹرنیشنل پلیٹ فام  مہیا کرنا۔
4.ریڈیو کے حوالے سے اہم دنوں پر تمام سامعین اور سامعین کلبوں کے ساتھ مل کر پروگرام تریب دینا۔
5.عوام کو ریڈیو کی اہمیت اور افادیت سے آگاہ کرنا ، ورکشاپ، سیمینار اور نمائشوں کا اہتمام کرنا۔
6.پاکستان میں بننے والے نئے سامعین کلبوں کے ساتھ بھرپور تعاون کرنا اورمزید  کلبوں کے قیام کی ترغیب دینا۔
7.جو سامعین میں مقبول ترین نشریاتی ادارے تھے  جنہوں نے اردو نشریات ختم کردیں ان ممالک کی حکومتوں سے انہیں دوبارہ بحال کرنے کے لیئے بین القوامی سطح پر رابطہ کرنا۔
8. سامعین میں مقبول ترین نشریاتی اداروں کی حوصلہ افزائی کرنا اور انہیں زیادہ سے زیادہ تعداد میں  تبصرے روانہ کرنا ۔
9. پاکستان بھر سے نشریاتی اداروں کی نشریات کی ریسیپشن رپورٹ  مرتب کرنا   ااور روانہ  کرنا۔
10. دنیا بھر کے نشریاتی اداروں کے ذریعے پاکستان کے تشخص کو اجاگر کرنا ،پاکستانی ثقافت کو متعارف کرانا ، عالمی سطح پر پاکستان کے بارے میں پائے جانے والی منفی سوچ کو زائل کرانا۔
11.پاکستان بھر کے ریڈیو سامعین ، سامعین کلب اور ریڈیو سے وابسطہ شخصیات سے رابطہ کے لیئے  ڈائیریکڑی مرتب کرنا۔
12.ریڈیو سے وابسطہ افراد کی خدمات کے اعتراف میں تعریفی سرٹیفکیٹ کا اجراء کرنا۔
13.سال بھر میں   ریڈیو کے حوالے سے سرگرم رہنے والے سامعین کو تعریفی سرٹیفکیٹ کا اجراء
14.ماہانہ بنیاد پر تمام پاکستانی سامعین سے آن لائن نشست کا انعقادکرنا۔
15.مندرجہ بالا  تمام نقاط پر رضاکارانہ طور پر عمل کرتے ہوئے ریڈیو سامعین کو ایک بہترین اور مضبوط پلیٹ فام مہیا کرنا۔
انٹرنیشنل ریڈیو لسنرز کلب کراچی پاکستان
irlclub@hotmail.com

چائنا ریڈیو انٹرنیشنل کی جانب سےپاکستان چین سفارتی تعلقات کی پینسٹھویں سالگرہ کے موقع پر سامعین کی جانب سے موصول ہونے والی شاعری کو ایف ایم نائٹی ایٹ دوستی چینل کے فیس بک پیج پر اپ لوڈ کر دیا گیا ہے ۔

چائینا ریڈیو انٹرنیشنل کی جانب سے 

پاکستان اور چین کے درمیان قائم ہونے 

والے سفارتی تعلقات کی پینسٹھویں 

سالگرہ کے موقع پر سامعین کے درمیان 

جس شاعری کے مقابلے کا انعقاد کیا گیا 

تھا اس سلسلے میں سامعین کی جانب سے بھیجی جانے والی شاعری کو ایف ایم نائٹی 

ایٹ دوستی چینل کے فیس بک صفحہ پر اپ لوڈ کردیا گیا ہے ، بیس مئی تک سب 

سے زیادہ لائیکس حاصل کرنے والی شاعری کو  کامیاب قرار دیا جائے گا 

 تو آئیے سنیئے اور اپنی پسند کی شاعری کو لائیک کریئے۔

پاکستان اور چین کے سفارتی تعلقات کی پینسٹھویں سالگرہ کے موقع پر سی آر آئی کی جانب سے سامعین کے درمیان شاعری کا مقابلہ۔

سامعین کو  " پاک چین دوستی " پر ایک نظم لکھ کر اپنی آواز میں ریکارڈ کرکے ایک تصویر کے ساتھ بھیجنی ہے سی  آر آئی کو بذریعہ ای میل لیکن 10 مئی 2016 سے پہلے۔